1,074

(آئی ایل او ) اور (آئی او ایم ) کے مابین اوورسیز ورکرز کو حقوق کو تحفظ ملے گا اور غربت ختم ہو گی

راولپنڈی ( سی این پی ) انٹرنیشنل لیبر آرگنائزیشن (آئی ایل او ) اور انٹرنیشنل آرگنائزیشن فار مائیگرینٹس(آئی او ایم ) کے مابین اوورسیز ورکرز کے حقوق کے تحفظ کے حوالے سے گذشتہ روزجنیوا میں طے پانے والے معاہدے کے نتیجے میں نہ صرف ورکرز کے مفادات اور حقوق کو تحفظ ملے گا بلکہ غربت و بے روزگاری کے خاتمے اور متعلقہ ممالک کی معیشت کی بہتری میں بھی معاونت حاصل ہوگی . یہ بات اوورسیز پاکستانیوںکے حقوق، ان کی بہبود اور روزگار کے تحفظ کیلئے کام کرنے والے نائٹ ہیومین مینجمنٹ و شالان کے چیف ایگزیکٹو خالد نواز نے مذکورہ معاہدہ طے پانے پر آئی ایل او کے ڈائریکٹر جنرل گے رائیڈر (GUY RYDER) اور آئی او ایم کے ڈائریکٹر جنرل انٹونیووٹورینو (ANTONIO VITORINO) کو مبارکباد دیتے ہوئے کہی . انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کی مہلک لہر کی وجہ سے دنیا کے تمام ممالک بالخصوص ترقی پذیر ملکوں کے عوام اور ان کی معیشت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا جس کے تدارک کیلئے بھی مذکورہ دونوں عالمی اداروں کے مابین باہمی تعاون انتہائی خوش آئیند امر ہے . خالد نواز نے کہا کہ خاص طور پر یہ بات محسوس کی جا رہی تھی کہ روزگار کیلئے اپنے وطن کو چھوڑ کر بیرون ملک جانے والے افراد ، ان کے اہل خاندان اور ممالک کے مفادات کو نہ صرف بڑھایا جائے بلکہ انہیں تحفظ بھی دیا جائے اور مذکورہ معاہدے سے اس جانب بھی مثبت پیش رفت ہوگی . انہوں نے کہا کہ پاکستان کے اندر بیرون ملک ملازمتوں کیلئے کام کرنے والے اوورسیز ایمپلائمنٹ پروموٹر کی تعداد پانچ ہزار تک ہے جو ملک کے ہنر مند اور غیر ہنر مند افراد کو دنیا کے مختلف ممالک میں بھجوا کر غربت وبے روزگاری کے خاتمے اور ملک کو قیمتی زرمبادلہ دلوانے میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں مگر انہیں بے شمار مسائل کا سامنا ہے . اگر حکومت ان مسائل کو حل کرکے ان کی مکمل سرپرستی کرے تو یہ ادارے وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے اعلان کردہ نوجوان نسل کیلئے بیرونی ممالک بالخصوص گلف ممالک میں باعزت روزگار کے زیادہ سے زیادہ مواقع تلاش کرکے حکومتی معاونت کر سکتے ہیں .
………………………………………

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں