1,151

راولپنڈی:تھانہ نصیرآباد . دودھ سپلائر کمپنی کے ملازمین کے ساتھ ڈکیتی کی وارداتوں کا ڈراپ سین کمپنی کے اپنے ملازم ہی ملوث نکلے

راولپنڈی:تھانہ نصیرآباد کے علاقے میں دودھ سپلائر کمپنی کے ملازمین کے ساتھ ڈکیتی کی وارداتوں کا ڈراپ سین،کمپنی کے اپنے ملازم ہی ملوث نکلے،ملازمین کمپنی کی رقم غبن کر کے ڈکیتی کی جھوٹی اطلاع 15پردیتے اور خود مدعی بن جاتے،ملزمان کے قبضہ سے غبن کی گئی رقم اور وارداتوں میں استعمال ہونے والا اسلحہ برآمد۔تفصیلات کے مطابق راولپنڈی پولیس کا منظم و متحرک گینگز کے خلا ف کاروائیوں کا سلسلہ جاری ہے،تھانہ نصیرآباد کے علاقے میں دودھ سپلائر کمپنی کے ملازمین کے ساتھ ڈکیتی کی وارداتوں کا ڈراپ سین ہو گیا،کمپنی کے اپنے ملازم ہی ملوث نکلے،ملازمین کمپنی کی رقم غبن کر کے ڈکیتی کی جھوٹی اطلاع 15پردیتے اور خود مدعی بن جاتے،ملزمان گینگ کی صورت میں ڈکیتی


کی دیگر وارداتوں میں بھی ملوث نکلے، ایس ایچ او نصیر آباد نے بتلایا کہ ملزمان دودھ سپلائر کمپنی میں ملازم ہیں جو کمپنی کی گاڑی کو ویران علاقے میں لے جاتے، اُن کا ہمراہی ساتھی موٹر سائیکل پر پیچھے آتا جو رقم چھیننے کا ڈرامہ کرکے جھوٹی واردات کو ڈکیتی کا رنگ دیتے، ایس ایچ او نصیر آباد اور اُن کی ٹیم نے ڈکیتی کی واردات کو بے نقاب کرتے ہوئے کمپنی کے ملازمان کو شامل تفتیش کیا،جنہوں نے تفتیش کے دوران جھوٹی واردات کو ڈکیتی کا رنگ دے


کر 15پر اطلاع دینے کا انکشاف کیا،جس پر پولیس نے ماسٹر مائنڈ عبیدفیاض کو ساتھیوں سمیت گرفتار کر لیا، گرفتار ملزمان میں گینگ کا سرغنہ عبید فیاض اور ساتھی محمد ناصر، محمد صبور اور صمد اشفاق شامل ہیں،ملزمان کے قبضہ سے جھوٹی واردات کے دوران غبن کی گئی رقم 05لاکھ80ہزار روپے اور وارداتوں میں استعمال ہونے والا اسلحہ برآمدکر لیا گیا،ایس پی پوٹھوہار نے ایس ایچ او نصیر آباد اور پولیس ٹیم کو شابا ش دیتے ہوئے کہا کہ ملزم جتنا بھی شاطر اور ہوشیار کیوں نہ ہو قانون کی گرفت سے نہیں بچ سکتا، گرفتار ملزمان کے دیگر سہولت کاروں کو بھی گرفتار کیا جائے،ملزمان کو ٹھوس شواہد کے ساتھ چالان کر کے عدالت سے قرار واقعی سزا دلوائی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں