1,049

اسلام آباد ؛ جعلی پولیس اہلکاروں نے شہری کو اٹھا لیا ؛ بد ترین تشدد

اسلام اآباد ( رائے ولید بھٹی ) جعلی پولیس اہلکاروں نے شہری کو ہوٹل کے کمرے سے اغواء کر لیا، تھانہ آبپارہ پولیس کو حسرت گل نے درخواست دی کہ اسلام آباد میں پراپرٹی کا کام کرتا ہوں مورخہ 13/06/22 کو وقت 05/06 بجے شام ہوٹل کے کمرے میں موجود تھا کہ ہ 8 / 7 افراد جن میں شہر یار ، محمد عامر ، شهروز احمد ، حسن احمد اور دیگر قریبا 4 / 3 نامعلوم افراد جو کمرہ میں زبر دستی داخل ہوئے اور آتے ہی مار پیٹ شروع کر دی 4 / 3 نامعلوم افراد تھے اپنے آپ کو پولیس ملازم ظاہر کر رہے تھے جن کو سامنے آنے پر شناخت کر سکتا ہوں مجھے زدو کوب کرتے ہوئے ہوٹل سے باہر لا کر گاڑی میں زبر دستی بٹھا یا اور DHA کی طرف روانہ ہوئے اور گاڑی میں شہروز اور شہر یار مسلسل زدو کوب کرتے رہے ،




ڈی ایچ اے پہنچ کر سب سے پہلے مجھے اپنے آفس میں لے گئے اور وہاں پر زدو کوب کرتے رہے جس میں منصور اور دیگر 7/8 نامعلوم افراد مارتے رہے بعد میں فلیٹ لے گئے وہاں رات کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا اور بازوؤں پر جلتے سگریٹ لگاۓ اور مجھے گھر سے فون کر کے جیسے منگوانے کا کہتے رہے انہوں نے اپنے نمبر سے میرے دوست مبشر کو کال کروائی جس کو میں نے کہا کہ میں نے ان کے پیسے دینےہیں ، میری مدد کر میں اس نے مورخہ 14/06/22 کو شام کو ڈی ایچ اے انتظامیہ کو اطلاع دی جس پر اتظامیہ متحرک ہو ئی اور مجھے ٹریس کر نا شروع کر دیا 15/06/22 کو تقریبا12:15 بجے دن مجھے گاڑی میں بٹھا کر روات شفٹ کرنے لگے تو ڈی ایچ اے کے گیٹ نمبر 02 پر سیکورٹی گارڈ نے روک کر مجھے بر آمد کیا اپنے اعلی افسران کے نوٹس میں دیا جنہوں نے تھانہ سہالہ پولیس کے حوالے کیا ، پولیس نے مقدمہ درج کر لیا،

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں