1,031

لکثری اشیاء پر پابندی ؛ تاجروں کو شدید نقصان کا سامانا

راولپنڈی( سی این پی ) راولپنڈی چیمبر آف سمال ٹریڈرز اینڈ سمال انڈسٹری کے صدر شیخ آصف ادریس نے کہا ہے کہ حکومت نے تاجروں کو اعمتماد میں لئے بغیر لکثری اشیاء پر پابندی لگا دی جس سے امپورٹ کرنے والے بیشتر تاجروں کو جنہوں نے آرڈر بک کروائے تھے انھیں کاروبار نقصان کا سامنا کرنا پڑا ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ پر تعیش پر لگائی جانے والی پابندی پر نظر ثانی کی جائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز متاثر ہونے والے تاجروں کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر گروپ لیڈر ملک شاہد غفور پراچہ،صدر چائنا مارکیٹ طارق جدون، حاجی فضل الرحمن صدر انجمن تاجران باجوڑ راولپنڈی، شوکت علی صافی سی او پاک چائنا اورسیز کمیونٹی، حیدر علی، لیاقت خان، شیخ شاہد، شیخ عاصم ادریس، اشرف پسوال، اور فضل مولا بھی موجود تھے۔ سی او پاک چائنا اورسیز کمیونٹی شوکت علی صافی نے کہا کہ شیپنگ لیٹ ہو رہی ہے اسے فوری کھولا جائے ایک ایس ایم کوڈ پر 50آئیٹم آتے ہیں جو بین لکثری میں آتے ہیں اس کے علاوہ باقی چھوڑ نا چایئے امپورٹ پر دوماہ کی پابندی کی وجہ سے کاروباری افراد کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے




اگر تاجر برادری نے ان دو ماہ کے بارے میں مسئلہ نہ اٹھایا تو ان پر مزید پابندیوں میں توسیع ہو سکتی ہے جس کا کوئی تاجر متحمل نہیں ہو سکتا اس لئے حکومت سے اپیل کرتے ہیں کہ پابندیوں کی وجہ سے تاجروں کے کاروبار کو ختم ہونے سے بچایا جائے۔ گروپ لیڈر ملک شاہد غفور پراچہ نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ ان مسائل کو حل کرانے کیلئے اپنا کردار ضرور ادا کریں گے اگر تاجروں کو کو ئی بھی مسئلہ ہو تو چیمبر کے پلیٹ فارم پر ہم سے رابطہ کریں تاکہ یکجا ہو کر ان مسائل کو حل کروایا جائے۔شیخ آصف ادریس نے کہا کہ ملک کو بچانا ہے تو لوکل انڈسٹری میں آسانیاں پیدا کرنا ہوں گی حکومت جن آئیٹم پر پابندی لگائی ہے اس سے کئی لوگوں کا کاروبار متاثر ہو رہا ہے کاروباری لوگوں کا اربوں روپے کا سامان پڑا ہے اگر وہ مال ملک میں آئے تو اس سے ملکی زرمبادلہ میں اضافہ ہوگاطارق خان جدون نے کہا کہ کراکری آئیٹم ایسی ضرورت ہے جس کی افادیت سے انکار نہیں کیا جا سکتا حکومت کو اس ضمن میں نوٹس لیکر پابندی پر نظرثانی کرنی چایئے۔حاجی فضل الرحمن نے کہا کہ سابق حکومت نے لکثری اشیاء پر ٹیکس بڑھایا




جبکہ موجودہ حکومت نے آتے ہیں ایک بار پھر لکثری آئیٹم پر پابندی لگا دی ایک حکومت جو کنسائمنٹ راستے ہیں انھیں فوری کھولا جائے اسے حکومت کی قائمہ کمیٹی تک پہنچایا جائے انہوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سے کچھ چیزوں پر پابندی جن میں موبائل کاریں وغیرہ شامل ہیں ٹھیک ہے اسی طرح سکول بیگز، کراکری، عینک وغیرہ لکثری آئیٹم میں نہیں آتے حکومت کا ہدف 30جون تک ہے چائنا شپنگ ڈیلے ہوتا ہے کنٹینر کبھی ہوتے ہیں کبھی نہیں ہوتے جو کوڈ کی وجہ سے شپ نکلا ہے ہمیں 15جون تک کنٹینر کلیئر کیئے جائیں انہوں نے کہا ہمیں 15جون تک شپنگ کی اجازت دی جائے چائنا میں میں کورونا کی وجہ سے مال رکا ہوا ہے۔حاجی لیاقت نے کہا کہ ملک کی بد قسمتی ہے کہ جو بھی حکومت مین آتا ہے اپوزیشن میں بیٹھ کر نکتہ چینی کرتا اس سے کچھ نہیں بنتا جن آئیٹم پر پابندی لگائی گئی ہے اس کے متبادل انڈسٹری کی سہولت دینی چایئے23 سال سے چائنا جا رہاہوں وہا ں تاجروں کو سہولیات دی گئی ہیں حکومت کو چایئے کہ وہ ضمن میں اقدامت کرے قوم کا اصل مسئلہ مہنگائی اور بے روزگاری ہے سن گلاسز پر پابندی کے باعث لوگوں کے آرڈر ہو چکے ہیں ان کو اجازت دی جائے۔۔انڈسٹری چلانے کیلئے نہ بجلی نہ گیس ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں