1,048

کم عمر پاکستانی سنوکر ورلڈ چیمپئن احسن بدترین حالات سے دوچار

لاہور (اردو پوائنٹ ) پاکستان کے کم عمر ترین ورلڈ سنوکر چیمپئن احسن رمضان بدترین حالات سے دوچار ہوگئے ہیں۔ احسن رمضان جنہوں نے سنوکر کے کھیل میں پاکستان کا نام روشن کیا ہے، وہ سنوکر کلب کے ایک کمرے میں شب و روز گزارنے پر مجبور ہیں۔ کم عمری میں والدین کا سایہ اٹھنے کی وجہ سے تعلیم جاری نہ رکھ پانے والے عالمی چیمپئن کلب ٹورنامنٹ جیت کر اپنے اخراجات پورے کرتے ہیں۔




احسن رمضان نے شکوہ کیا کہ گزشتہ حکومت نے انعامات کا اعلان کیا تھا لیکن دیا کچھ بھی نہیں ہے، نئی حکومت سے امیدیں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اب بہت کچھ ہے لیکن حکومتی سرپرستی کی ضرورت ہے، اگر ایسا نہ ہوا تو وہ پروفیشنل سنوکر کے لیے انگلینڈ چلے جائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں