1,039

تشدد کا نشانہ بننے والی دونوں خواتین کون ہیں . تفصیلات سامنے آ گئیں

اسلام آباد(سی این پی) گزشتہ روز سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہوئی جس میں قصور کے تھانہ میں ایک خاتون دو خواتین کو زمین پر الٹا لٹا کر چپل سے تشدد کا نشانہ بنا رہی تھی ،اس میں نظر آنے والی متاثرہ خواتین کے بارے میں معلومات سامنے آ گئی ہیں ۔




تفصیلات کے مطابق ویڈیو میں تشدد کرنے والی خاتون پولیس کی ملازم نہیں بلکہ پرائیویٹ خاتون ہے جبکہ ویڈیو بنانے والی لڑکی پولیس کانسٹیبل عائشہ ہے جس کی شناخت عائشہ کے نام سے ہوئی ۔ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد پرائیویٹ خاتون کو گرفتار کر لیا گیا جبکہ پولیس کانسٹیبل خاتون اور پولیس افسر کو بھی حراست میں لیتے ہوئے مقدمہ درج کر لیا گیاہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں