1,497

پولیس کی وردی اور رینک تبدیل کر نے کا فیصلہ

لاہور( سی این پی) پولیس پنجاب انعام غنی نے کہا ہے کہ تفتیشی افسران کی کارکردگی کا جائزہ لینے کیلئے ایڈیشنل آئی جی انویسٹی گیشن ریجنز اورا ضلاع کے دورے کریں اورتفتیش کے معیار کو بہتر سے بہتر بنانے کیلئے ڈکیتی، قتل، اغواء برائے تاوان سمیت دیگر سنگین جرائم کے کیسز کی ڈیجیٹل مانیٹرنگ کو جاری رکھتے ہوئے مزید موثر بنایا جائے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ فورس کے احتساب کے عمل میں پہلے جزاپھر سزا کی پالیسی اور ڈسپلن میٹرکس کو لازمی مد نظر رکھا جائے اور جو افسران طے کردہ ایس او پیز کے برعکس سزائیں دیں انہیں اظہار وجوہ کے مراسلے جاری کرتے ہوئے




جواب طلبی کی جائے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ پولیس فورس کی تربیت اور استعداد کار میں اضافے کیلئے دستیاب وسائل کے بہترین استعمال کو یقینی بنانا محکمے کی اولین ترجیحات میں شامل ہے لہٰذاٹریننگ ماڈیولز کو اپ گریڈ کرنے کے ساتھ ساتھ تمام تربیتی کورسز میں جدید آئی ٹی ٹیکنالوجی کے استعمال کو مزید فروغ دیا جائے تاکہ اہلکار دور جدید کے تقاضوں کے مطابق تربیتی مراحل مکمل کرکے عوام کی خدمت اور حفاظت کے فرائض مزید عمدگی سے سر انجام دے سکیں۔ انہوں نے یونیفارم کے کپڑے کے معیار کو مزید بہتر بنانے کے حوالے سے ہدایات دیتے ہوئے کہاکہ پولیس فورس کے یونیفارم کیلئے ایسے آرام دہ اوربہتر کپڑے کا انتخاب کیا جائے جو ہر طرح کے موسمی حالات سے نبرد آزما ہونے کے ساتھ ساتھ دفاتر اور فیلڈ دونوں ڈیوٹیوں میں معاون ثابت ہو۔ اجلاس میں مختلف عہدوں کے رینکس کے ڈیزائن کو فائنل کرنے کیلئے تفصیلی غور وخوض کیا گیا اور آئی جی پنجاب نے اس حوالے سے سفارشات کو حتمی شکل دے کر ایگزیکٹو بورڈ کے آئندہ اجلاس میں پیش کرنے کی ہدایت کی۔ یہ ہدایات انہوں نے پولیس ایگزیکٹو بورڈ کے سنٹرل پولیس آفس میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کے دوران جاری کیں۔ دوران اجلاس تفتیشی افسران کی اے سی آرز لکھنے اور ایڈیشنل آئی جی انویسٹی گیشن کے اختیارات مزیدبڑھانے پر بھی غورکیا گیا۔




دوران اجلاس ایڈیشنل آئی جی اسٹیبلشمنٹ اظہر حمید کھوکھر سمیت دیگر افسران نے زیر بحث امو ر کے حوالے سے اظہار خیال کرتے ہوئے اپنی تجاویز اور سفارشات پیش کیں جس پر آئی جی پنجاب نے ہدایات دیتے ہوئے کہاکہ تمام تجاویز کو حتمی شکل دے کر منظوری کیلئے ایگزیکٹو بورڈ کے آئندہ اجلاس میں پیش کیا جائے۔ انہوں نے مزیدکہا کہ میرٹ اور سنیارٹی کے مطابق اہلکاروں کی بروقت ترقیوں کیلئے محکمانہ پروموشن بورڈکے اجلاس باقاعدگی سے منعقد کئے جائیں جبکہ تمام افسران اپنے ماتحت اہلکاروں کی اے سی آرز کو بروقت مکمل کریں تاکہ پروموشن بورڈ اجلاسوں کے انعقاد میں کوئی رکاوٹ باقی نہ رہے۔ اجلاس میں تمام ایڈیشنل آئی جیز، ڈی آئی جیز اور اے آئی جیز سمیت دیگر افسران بھی موجود تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں